سعودی عرب میں دو بحرینی شہریوں کے دہشت گردی کی منصوبہ بندی کے جرم میں سرقلم کردیے گئے ہیں۔دونوں مجرم سعودی عرب میں حملوں کے مقصد سے ایک دہشت گرد سیل میں شامل ہوئے تھے۔

سعودی وزارتِ داخلہ نے پیر کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ جعفر محمد علی محمد جمعہ سلطان اور صادق مجید عبدالرحیم ابراہیم ثامر کو ایک دہشت گرد تنظیم میں شامل ہونے کے الزام میں قصور وار قرار دے کرسزائے موت سزائی گئی تھی اور وہ بحرین میں بھی مطلوب تھے۔

بیان کے مطابق اس دہشت گرد گروپ کے ارکان نے سعودی عرب اور بحرین کو غیر مستحکم کرنے، مملکت میں چھپے ہوئے انتہا پسندوں کے ساتھ مل کر کام کرنے، خطرناک ہتھیاروں کی اسمگلنگ اور ذخیرہ کرنے اور دونوں ممالک پر حملوں کی منصوبہ بندی کرنے کے طریقوں کے بارے میں تربیت حاصل کی تھی۔

ان کے خلاف سعودی عرب کی خصوصی فوجداری عدالت میں مقدمہ چلایا گیا ہے۔اس نے دونوں کو سزائے موت کا حکم دیا تھا اور مملکت کی عدالت عظمیٰ نے بھی اس فیصلے کی توثیق کی تھی۔

وزارتِ داخلہ نے خبردار کیا ہے کہ سعودی عرب کی سلامتی کو غیرمستحکم کرنے کا ناپاک ارادہ رکھنے والے مجرموں کو اسی طرح سخت سزا دی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے