کرونا کی وبا کے نتیجے میں فرانس میں ہزاروں کی تعداد میں لوگ ہلاک اور بیمار ہوئے ہیں۔ حیران کن طور پرفرانس میں کرونا کے نتیجے میں چند روز میں 1300 یہودی بھی ہلاک ہوگئے۔ یہودیوں کی ہلاکت ایک معمہ بنی ہوئی ہے۔

اگرچہ فرانس میں یہودیوں کی تعداد نصف ملین سے زیادہ ہے۔ فرانس کی 6 کروڑ 80 لاکھ آبادی میں 7 فی صد یہودی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق متعدد میڈیا ذرائع نے خبر دی ہے کہ فرانس میں کرونا سے 1300 یہودی ہلاک ہوئے ہیں تاہم اتنی بڑی تعداد میں یہودیوں کی اس وبا سے ہلاکت حیران کن بتائی جا رہی ہے۔

"کرونا” وائرس کے نتیجے میں گذشتہ بدھ تک فرانس میں 1300 سے زیادہ یہودی ہلاک ہوچکے تھے۔ یہودی ٹیلی گرافک ایجنسی جو یہودی کمیونٹی سے متعلق خبریں شائع کرتی ہے کے مطابق یہودیوں کی میتوں کی تدفین کرنے والی تنظیم کا کہنا ہے کہ فرانس میں کرونا سے مرنے والے کل افراد میں 5 فی صد یہودی ہیں۔ فرانس میں اب تک 25 ہزار 897 افراد ہلاک ہوچکےہیں۔

سوسائٹی "شیورا قادیشا” کو بظاہر دباؤ ڈالنے کے بعد ان کی تعداد ظاہر کرنے پر مجبور کیا گیا۔ یہ بھی اطلاعات ملی ہیں مذکورہ تنظیم نے کرونا سے ہلاک ہونے والے سیکڑوں یہودیوں کوتدفین کے لیے ان کی وصیت کے مطابق اسرائیل منتقل کیا۔

اگرچہ کرونا میں ہلاک ہونے والے فرانسیسی یہودیوں کی تعداد پر سوالیہ شنان ہے مگر اسرائیلی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ فرانس میں کرونا سے ہلاک ہونے والے یہودیوں کی تعداد 2000 تک ہوسکتی ہے جو کل ہلاکتوں کا 7 اعشاریہ سات فی صد ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے