سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارت کا ظلم جاری ہے، قابض فوج نے ظالمانہ کارروائی کرتے ہوئے 4 نوجوانوں کو شہید کر دیا۔ 224 روز سے جاری کرفیو اور لاک ڈاؤن کے سبب مقبوضہ وادی میں زندگی اذیت ناک ہو گئی.

 مقبوضہ وادی انگار وادی بن چکی ہے، بھارت نے فوجی دہشت گردی کے دوران مزید کشمیریوں کو شہید کر دیا۔ ضلع اننت ناگ اسلام آباد کے گاؤں میں قابض فوج نے سرچ آپریشن کی آڑ میں نوجوانوں کو شہید کیا، بھارتی فوج نے علاقے کو مکمل سیل کر دیا۔

 ظالم فوج گلیوں اور سڑکوں پر گشت کر کے خوف وہراس پھیلاتی رہی، ظالمانہ کارروائی کے خلاف کشمیری عوام نے بھارت کے خلاف شدید احتجاج کیا۔

224 روز سے جاری کرفیو اور لاک ڈاؤن سے مقبوضہ وادی میں زندگی آج بھی قید ہے، وادی میں صورتحال انتہائی سنگین ہو چکی ہے، کاروباری مراکز اور تعلیمی ادارے بند ہیں۔ ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے برابر ہے۔ مظالم کے باوجود کشمیری بھارت سے آزادی کے لیے پرعزم ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے